خوشی کیسے حاصل کریں؟

2

۳۔اپنی ذات کو وقت دیں
گھر کے کام کاج روزی روٹی کی فکر کے ساتھ ساتھ اپنی ذات کو بھی وقت دیجئے، 6 دن جی جان سے محنت کریں ویک اینڈ اپنے گھر والوں اور عزیزوں دوستوں کے ساتھ گزاریں، گھر سے باہر تفریح کے مواقع اپنے اہل خانہ کو بھی دیں اور خود بھی ان کے ساتھ رہیں۔ ماہر نفسیا ت کہتے ہیں کچھ دنوں کی مسلسل ذہنی اور جسمانی مشقت کے ساتھ ایک دن کی سیروتفریح انسانی صحت کے لئے وٹامن کی حیثیت رکھتی ہے۔ دن میں ایک بار خصوصاً صبح کی سیر کو اپنی عا دت بنائیں، فطرت کے مناظر دیکھیں جو آپ کی ذہنی اور جسمانی بالیدگی کا باعث بنتے ہیں۔ اپنی حیثیت کے مطابق اپنے آپ کو بنائیں سجائیں یہ سب کرنا آپ کو اچھا بھی لگے گا اور آپ اپنے آپ کو ہلکا پھلکا محسوس کریں گے اور ذہنی سکون بھی پائیں گے، ذہنی سکون خوشی کا دوسرا نام ہے۔

۴۔دوسروں کو دینا سیکھیں
ہمیشہ کچھ نہ کچھ تقسیم کریں چاہے وہ مسکراہٹ ہو، عام مشورہ یا نصیحت ہو، پیسہ ہو۔ معلوماتِ انسانی نفسیا ت کے ماہر کہتے ہیں انسان کو فطری طور پر کچھ اسطرح بنایا گیا ہے کہ اس کے دل و دماغ دوسروں کو مدد کر کے دوسروں کے کام آ کر مطمئن ہوتے ہیں اس لئے جو آپ سے بُرا کرے آ پ اسے اچھائی تقسیم کریں، جو آپ سے کچھ چھین لے آپ اسے نواز دیں، جو آپ کو گالی دے آپ اسے دعا دیں، یہی صلہ رحمی ہے اور صلہ رحمی کرنے والے ہمیشہ مطمئن دارز عمر گزارتے ہیں، اطمینانِ قلب اصلی خوشی کا سر چشمہ ہے جو کچھ دینے سے حاصل ہوتا ہے وہ لینے سے ہرگز نہیں۔

۵۔مزاح کی حس پیدا کریں
جب آپ بہت پریشان ہوتے ہیں بچوں کی معصوم سی شرارت آپ کو ہنسا دیتی ہے، جیسے ہی آپ ہنستے ہیں دماغی نیوران پرسکون ہو جاتے ہیں اور بچوں کی یہ شرارتیں آپ کی ہمت کو اجاگر کرتی ہیں۔ پس لطیفے پڑھیے اور سنائیے اچھے مزاحیہ پروگرام مضامین اور ڈرامے ذہنی خوشی کا باعث بنتے ہیں اپنے لئے جان بوجھ کر خوشی کا انتخاب کریں، خوش رہنے کی کوشش کریں، دوسروں کو مسکراہٹ کا تحفہ دیں، مسکرانا بذات خود نیکی اور صدقہ شمار ہوتا،ہے۔ مسکرانے سے ذہنی اور جسمانی تناؤ ختم ہوتا ہے، خوشی ذہنی اور جسمانی سکون کا نام ہے۔

اپنی رائے یہاں لکھیئے:-

comments