کرسٹی انٹروینشن: حقیقت پر مبنی کہانی

2

انٹروینشن ایک ایسا تعلیمی عمل ہے جو کہ کسی پروفیشنل کی جانب سے کیا جاتا ہے جس میں قریبی دوستوں اور فیملی ممبران کی آمنے سامنے ملاقات ہوتی ہے۔ ایڈکشن میں مبتلا افراد اکثر اوقات خود فریبی میں مبتلا ہوتے ہیں اور علاج میں جانے کے لئے رضامند نہیں ہوتے وہ اپنے منفی رویوں کو پہچان نہیں پاتے اس کے علاوہ ان کے اردگرد کیا ہو رہا ہے اس کا بھی انہیں کچھ معلوم نہیں ہوتا۔ اسی لئے انٹروینشن، الکوحل اور منشیات سے پیدا ہونے والے مسائل کے بارے میں آگاہی فراہم کرتا ہے۔ جب کرسٹی نو سال کی تھی تو اس کے والدین میں علحیدگی ہو گی اور بغیر کسی پابندی کے وہ زندگی گزارنے لگی اور اسی دوران وہ بہت مختلف ہو گئی اور اس کی ماں نے رپورٹ کیا کہ “کچھ اس سے چھن گیا ہے” طلاق کے بعد کرسٹی کی ماں، کرسٹی اور اس کی چھوٹی بہن کے ساتھ کہیں اور گئی۔God Fatherکے مطابق باپ کی دوری نے کرسٹی کی زندگی کو بہت متاثر کیا۔ کرسٹی کے سوتیلے بھائی کے مطابق “کرسٹی جیسے جیسے بڑی ہوتی گئی تو اس نے ایسے دوستوں میں اٹھنا بیٹھنا شروع کر دیا جو کہ منشیات کا استعمال کرتے تھے” اس نے چودہ سال کی عمر میں کرسٹل میتھ لینا شروع کی۔ جب اس نے الکوحل اور کرسٹل میتھ لینا شروع کی تو اسے ڈریس ڈیزائنر کے طور پر اپنا کیرئیر روشن دکھائی دینے لگا۔ سولہ سال کی عمر تک وہ ہفتہ میں تین سے چار دفعہ کرسٹل میتھ کا استعمال کر رہی تھی جس کی وجہ سے اس کے رویوں میں نمایاں تبدیلی آنے لگی اور تب وہ گریڈ دس میں تھی۔ وہ اپنے اہل خانہ سے بحث و مباحثہ کرنے لگ پڑی بعد میں اس کی ماں کو اس کے منشیات کے استعمال کا پتہ چلا تب کرسٹی نے بتایا کہ میں لاس اینجلس اپنے والد کے پاس جانا چاہتی ہوں۔ کرسٹی کا رویہ اس حد تک خراب ہو گیا کہ اس کی ماں نے اسے جانے دیا۔

اٹھارہ سال کی عمر میں کرسٹی لاس اینجلس میں اپنے والد کے پاس چلی گئی۔ وہاں کرسٹی نے وحشت میں جانا شروع کر دیا اور ساری رات وہیں گزرتی تھی۔ یہ وہ وقت تھا جب ہر چیز قابو سے باہر ہوتی گئی اور اس نے کرائے کے مکان میں رہنا شروع کر دیا۔ اس قسط میں یہ دکھایا گیا ہے کہ کس طرح سے اس کے اہل خانہ ، خاص کر والد کی طرف سے اسے لاڈ پیار دیا گیا کرسٹی نے 23 سال کی عمر میں اسی دباؤ کے زیر اثر ڈرائیونگ سیکھی اور اپنی کار کے ساتھ ساتھ ڈارئیونگ لائسنس اور سیلز کی نوکری بھی گنوا دی۔ بعد میں اس نے ایک سٹریپر کے طور پر کام کرنا شروع کر دیا۔

ایک ایسا وقت آیا جب اس کے پاس الکوحل خریدنے کے لئے پیسے نہیں ہوتے تھے تو وہ مردوں کو کہتی کہ مجھ سے خریدو۔ قسط کے ایک منظر میں یہ بھی دکھایا گیا کہ اس کے رہنے کی حالت انتہائی ناقص اور غیر منظم ہو رہی تھی اس کے والد نے اسے اس کی صحت کے مطابق بتایا مگر وہ لڑنا شروع ہو گئی اور اس نے اپنے والد کی بات کو ان سنا کر دیا۔ اس کے والد بہت خوفزدہ ہو گئے کہ اس طرح سے تو یہ سڑک پر آ جائے گی جہاں سے واپس آنا مشکل ہو جائے گا۔ اس کی بہن نے بھی اسے سمجھانے کی کوشش کی مگر وہ بھی ناکام ہو گئی۔ آخر کار اس کے والد نے کرسٹی کو ایسی حالت سے باہر نکالنے کا فیصلہ کیا اور اس کی فیملی نے یہ فیصلہ کیا کہ کسی انٹروینشنسٹ کی مدد حاصل کی جائے۔

  • 1
  • 2
  • اگلا صفحہ:
  • 3

اپنی رائے یہاں لکھیئے:-

comments