ایڈیٹر: ندیم اقبال

شیزوفرینیا کی اقسام
علامت کی وجہ سے شیزوفرینیا کی مختلف اقسام ہیں بعض دفعہ ایک ہی شخص کو سال پہلے شیزوفرینیا کی کوئی قسم ہوتی ہے اور سال بعد اس ہی شخص کو بیماری کو بڑھنے کی وجہ سے قسم بھی تبدیل ہو جاتی ہے۔

1. Paranoid Schizophrenia
یہ شیزوفرینیا کی ایک قسم ہے جس میں مریض بہت زیادہ شک کر تا ہے کہ اسے کوئی مارنا چاہتا ہے یا ایجنسیاں اس کے پیچھے لگی ہوئی میں یا کہتا ہے کہ میری بیوی، بہن کے کسی دوسرے کیساتھ ناجائز تعلقات ہیں۔ عموماً اس ٹائپ میں مریض کام کاج ٹھیک کر رہا ہو تا ہے۔ بانسبت دوسری ٹائپ کے۔

2. Disorganized Schizophreni
اس ٹائپ میں مریض کی سوچوں میں خرابی پیدا ہو جاتی ہے اور اس کے روزانہ کے معمول کے کام کاج میں بھی خرابی پیدا ہو جاتی ہے جیسے کہ غسل کرنا، صفائی کا خیال رکھنا، دانت صاف کرنا، شیو کرنا، اور اس ٹائپ میں Hallucination اور Delusion بہت کم لیول کے ہو تے ہیں یا ہو تے ہی نہیں۔

3. Catatonic Schizophrenia
اس ٹائپ میں مریض کی مومنٹ میں خرابی پیدا ہو جاتی ہے۔ بعض دفعہ وہ جس Posture میں بیٹھا ہے اسی میں بیٹھا رہتا ہے یا کوئی Bodily Movement کرتا ہے تو وہ بار بار وہی کرتا رہتا ہے جیسے کہ میں ایک مریض کو جانتا ہوں جسے سارا دن جو کچھ بھی اسے مل جائے منہ میں ڈال لیتا ہے اور سارا دن وہ یہی حرکت کر تا رہتا ہے اور جیسے میں ایک مریض کو جانتا ہوں جو کہیں بیٹھا ہے تو گھنٹوں بغیر جسی حرکت کے وہیں بیٹھا رہتا ہے کہیں کھڑا ہو تو گھنٹوں کسی حرکت کے بغیر کھڑا رہتا ہے۔

4. Undiffrrentiated Schezophrenia
شیزوفرینیا کی یہ قسم اس وقت Diagnose کرتے ہیں جب مریض میں شیزوفرینیا کی علامتیں تو ہوں مگر واضح نہ ہو سکے کہ کون سی ٹائپ کی علامت ہے۔ عموماً ویسے بھی شیزوفرینیا کی بیماری کی ٹائپ ایک ہی مریض میں بدلتی رہتی ہے اس کی بیماری کے بڑھنے کے ساتھ ساتھ ۔

شیزوفرینیا کی وجوہات :
1. مورثی بیماری
شیزوفرینیا ایک مورثی بیماری ہے یعنی شیزوفرینیا کے ہونے کی وجوہات میں سے ایک وجہ یہ بھی ہے کہ اگر کسی کے خاندان میں کسی شخص کو شیزوفرینیا ہو تو اسکی اگلی نسل میں شیزوفرینیا ہونے کے زیادہ خدشات ہوتے ہیں۔

2. ماحول
زیادہ ذہنی دباؤ اور سختی والا ماحول بھی شیزوفرینیا کا باعث بنتا ہے۔

3. نشہ کا استعمال
جو لوگ نشہ استعمال کر تے ہیں ان میں شیزوفرینیا ہو نے کے خدشات زیادہ ہو تے ہیں اور نشہ میں چرس پینے والے لوگوں کو زیادہ شیزوفرینیا ہو نے کے خدشات ہوتے ہیں میرے پاس مریض آتے ہیں ان میں جو لوگ چرس پیتے ہیں ان کی بڑی تعداد کو شیزوفرینیا ہوتا ہے۔

4. کیمیکل کی خرابی
دماغ میں کیمیکل کے ردوبدل سے بھی شیزوفرینیا ہو سکتا ہے جیسے کہ نیورو ٹرانسمیٹر میں خرابی ہو جائے یا ڈوپا مین لیول زیادہ ہو جائے تو شیزوفرینیا ہوسکتا ہے۔ آپ کے گھر میں شیزوفرینیا کا مریض ہے آپ اس سے پیار کرتے ہیں، کیسے آپ اس کی مدد کر سکتے ہیں؟

1۔ Educate Yourself
سب سے پہلا کام اگر آپ کو کوئی کر نے کی ضرورت ہے تو آپ ان کی بیماری کے بارے میں جانیں۔ یہ کوئی اتنا مشکل کام نہیں ہے عموماً ہم کسی کو کہتے ہیں کہ آپ کے پیارے کو یہ بیمار ی ہو گئی ہے آپ سب سے پہلے اس کی بیماری کے بارے جانیں تو وہ کہہ دیتے ہیں کہ ہم کونسا ڈاکٹر ہیں اور کہاں سے جانیں۔ آپ گھر بیٹھے ان کی بیماری کی بارے میں جان سکتے ہیں۔ انٹرنیٹ تو آج کل ہر گھر میں موجود ہے آپ Google پر جائیں اور ٹائپ کریں Schizophrenia آپ کو ہر طر ح کی معلومات مل جائیں گی اس کے علاوہ آپ صداقت کلینک اور ولنگ ویز کے پروفیشنلز سے بھی مدد مانگ سکتے ہیں۔

2۔ Reduce Stress(ذہنی دباؤ کم کر یں )
ذہنی دباؤ شیزوفرینیا کو بڑھانے کا باعث بنتا ہے۔ اپنے پیارے پر کوئی ذہنی دباؤ نہ ڈالیں بلکہ اگر کوئی پریشانی والی بات ہوتی ہے تو اس سے دور رکھیں اور خود ذہنی دباؤ کی مینجمنٹ سکھیں اور اسے بھی سکھائیں دوبارہ میں کہوں گا کہ اگر ہم سیکھنا چاہیں تو بہت آسان ہے اور خود بھی پریشان نہیں ہونا کیونکہ ذہنی دباؤ آپ کیلئے بھی ٹھیک نہیں ہے۔ ہر مسئلہ اپنے ساتھ حل لیکر آتا ہے ہمیں اس کے حل کو ڈھونڈنا چاہیے۔ دنیا میں کوئی بھی مسئلہ نہیں ہے جس کا حل موجو د نہ ہو۔

3اپنے پیارے کو طا قتور کریں ۔
شیزوفرینیا میں عموماً خاندان والے کو ئی بیمار ہو تا ہے تو اس کے کام کاج کی ذمہ داری لے لیتے ہیں کام کاج سے میرا یہاں پر مطلب ہے کہ اس کے پرسنل کام کاج جیسے کہ کپڑے تبدیل کروانا، ٹوتھ برش کروانا، غسل کروانا، اس کو بستر پر کھانا پینا دینا، یہ نہیں کرنا شاہیے اس سے مریض Dependent ہو جاتا ہے اور بیماری اور بڑھتی ہے بلکہ ان تمام کام کاج کے ساتھ ساتھ مریض سے گھر کے اور چھوٹے چھوٹے کاموں میں مدد لینی چاہیے اس سے مریض کو اچھا لگتا ہے وہ اپنے آپ کو بے قدر نہیں سمجھتا اس کے اعتماد میں اضافہ ہو تا ہے۔

4اپنی صحت کا خیال رکھیں ۔
اگرآپ کے پیارے کو شیزوفرینیا ہو جائے تو آپ کو اپنی صحت کا بہت زیادہ خیال رکھنا چاہیے جیسے کہ آپ کو اپنی نیند پوری کرنی چاہیے ورزش باقاعدگی سے کر نا چاہیے۔ اپنے کھانے پینے کا خیال رکھنا چاہیے، اپنے لیے خود خوشیوں کا بندوبست کریں۔
5دوسروں سے مدد مانگیں ۔
جب آپ کے کسی پیارے کو شیزوفرینیا ہو جائے تو لازمی اپنے رشتہ داروں سے شیئر کریں اس سے ایک تو وہ آپ کی مدد کریں گے اور دوسرا آپ کا دکھ تقسیم ہوجائے گا، آپ کا ذہنی دباؤ کم ہوجائے گا۔

6. ادویات
اپنے پیارے کو urage Enco کرتے رہیں کہ وہ اپنی ادویات باقاعدگی سے لے بلکہ اس کی ادویات آپ کے پاس ہو نی چاہیے اور ان کو باقاعدگی سے خود ان کو ادویات دیں یا اس پر چیک رکھیں کیونکہ شیزوفرینیا کی بیماری سے بحالی میں ادویات کا بہت بڑا لردار ہے۔

7. فالو اپ
مریض کے فالو اپ باقاعدگی سے کروائیں اگر مریض راضی نہ ہو فالو اپ پر جانے کیلئے تویہ ایک وارننگ سائن ہے دوبارہ بیماری میں جانے کا۔ تواس وقت ماہرین کی مدد لینی چاہیے اور فالو اپ پر لے جانا چاہیے۔

8. ان ڈور علاج کا بندوبست کریں
ان ڈور علاج کیلئے پہلے سے کوئی علاج گاہ چن لیں اور وہاں کے لوگوں سے رابطہ رکھیں کسی کرائسس کی صورت میں فوراً ان سے رابطہ کریں۔

9. اگر وہ عجیب و غریب بات کرے تو انہیں کیسے ہینڈل کرنا ہے
اگر مریض Delusions Hallucinalions کی بات کرے تو ان کے ساتھ یہ بحث نہیں کرنی اور یہ نہیں کہا کہ یہ تو ہو ہی نہیں سکتا اور نہ ہی ان کی بات کو ٹھیک کہنا ہے بلکہ انہیں کہنا ہے کہ ہم آپ کی بات میں آپ کے ساتھ نہیں ہیں ہمیں یہ سب نظر نہیں آرہا۔ یہ بات بہت خاص ہے کہ کبھی بھی ان کے عقائد کو چیلنج نہیں کر نا کیو نکہ ان کی نظر میں یہ بہت حقیقی ہوتے ہیں۔

اپنی رائے یہاں لکھیئے:-

comments