سمیعہ چوہدری کی موت کا پردہ چاک، سارے راز فاش

2

جلد بازی سے کام لینے کی بدولت ہمیں بہت سی مشکلات کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ مثال کے طور پر ایک چوہا پنیر لینے کے لیے نتائج کی پرواہ کیے بغیر کڑکی میں پھنس جاتا ہے اور نتیجہ آپ جانتے ہی ہیں۔ کسی مزے کی چیز پر منہ میں پانی آنا فطری بات ہے لیکن یہ دیکھنا بھی ضروری ہے کہ مزے کی چیز کسی پھندے میں تو نہیں ہے۔ منشیات کا استعمال موڈ و مزاج کی کئی بیماریوں کی نشاندہی بھی کرتا ہے۔ ایسے حالات میں منشیات اور ذہنی ناہمواری مل کر جان لیوا پھندے کی شکل اختیار کر لیتے ہیں۔ اس کی قسمت موت بھی ہو سکتی ہے۔
samiya
آج کے دور میں عورتیں بھی مردوں کے شانہ بشانہ کام کر سکتی ہیں۔ پہلے دور میں زیادہ تر کام طاقت سے ہوتے تھے۔ جس میں مردوں کو آسانی تھی لیکن اب ذیادہ تر کام کاج سمجھ بوجھ سے ممکن ہیں، اسی لئے خواتین کے لئے کام کرنے کے مواقع بڑھ گئے ہیں۔ مگر خواتین ہوشیار باش!!!، آپ اپنی عزت اور خود اعتمادی کو ٹھیس نہ لگنے دیں تاکہ بعد میں احساس شرمندگی آپ کو منشیات میں نہ دھکیل دے۔ شروع شروع میں شارٹ کٹ بہت اچھے نظر آتے ہیں لیکن جب بند آنکھیں کھلتی ہیں تو اندھیرے چھا جاتے ہیں۔ جذبات میں کیے گئے فیصلے آپ کو نقصان کی گہری کھائی کے دہانے پر لے جاتے ہیں۔ جب بھی کوئی انسان منشیات کی جانب بڑھتا ہے تو وہ کہتا ہے کہ میں نے ایسا پریشانیوں سے چھٹکارا پانے کیلئے کیا، کیا واقعی ایسا کرنے سے پریشانیاں دور ہو جاتی ہیں؟ یہ تو اپنے آپ سے جھوٹ بولنے والی بات ہے۔ اس طرح پریشانیاں کم تو نہیں ہوتیں البتہ ان میں اضافہ ضرور ہو جاتا ہے۔ دیکھیئے! کس طرح سمیعہ چوہدری کو منشیات موت کے منہ میں لے گئیں۔
منشیات کے استعمال کے بعد ہماری فیصلہ کرنے کی صلاحیت بگڑ جاتی ہے۔ مرد ہوں یا خواتین، دونوں میں ہی خطرہ مول لینے کے امکانات منشیات کے استعمال سے بہت بڑھ جاتے ہیں۔ نا صرف یہ بلکہ جھگڑے، جنسی سرگرمیوں میں ملوث ہونا، گھر بار سے دوری، لوگوں پر اندھا اعتماد کر لینا اور اپنے اہداف کے لیے شارٹ کٹس کی تلاش شروع کر دینا، یہ نئے بگڑے ہوئے ذہنی نقشے بن جاتے ہیں۔

اس واقعے کا ایک دوسرا رُخ یہ بھی ہو سکتا ہے کہ بہت سی جگہوں پر انکار نہ کر پانا اور یہیں سے خطرے کا سرخ سگنل نظر آنے لگتا ہے۔ جب کسی کے اعلیٰ عہدے داروں کے ساتھ تعلقات قائم ہوں تو وہاں نہ کرنا مشکل ہو جاتا ہے اور اس دوران اگر کوئی منشیا ت کی آفر کر دے تو نہ نہیں ہو پاتی اور لوگ منشیات کی دلدل میں دھنستے چلے جاتے ہیں۔

اپنی رائے یہاں لکھیئے:-

comments